Featured Post

Terrorism and solution? دہشت گردی اور اس کا حل جوابی بیانیہ ؟

اِس وقت جو صورت حال بعض انتہا پسند تنظیموں نے اپنے اقدامات سے اسلام اور مسلمانوں کے لیے پوری دنیا میں پیدا کر دی ہے، یہ اُسی فکر کا...

Monday, November 11, 2013

​ امریکہ کیوں تحریک طالبان سے امن کے خلاف ہے ?Why USA is against peace with Pakistani Taliban

ہمارے میڈیہ کے بیشتر مبصرین بڑے سادہ لوح ہیں۔ وہ سوچتے ہیں کہ امریکہ کی سوچ وہی ہے جو ان کے خیال میں اس کی سوچ ہے اور یہ بدلتی بھی نہیں۔ حقیقت یہ ہے  کہ امریکہ کی سوچ اس کی اپنی ہوتی ہے اور وہ حالات کے ساتھ بدل بھی جاتی ہے۔ مبصرین کا ایک اور مسئلہ بھی ہے، جس کی بنا پر بھانت بھانت کی بولیاں بولتے ہیں۔ پورا سچ کوئی نہیں بول رہا ہوتا کیوں کہ ہر ایک کا اپنا اپنا ایجنڈہ ہے۔
سوچنے کی اصل بات یہ ہے کہ امریکہ کیوں ڈرون حملے بند نہیں کر رہا۔ ظاہر ہے کہ وہ تحریک طالبان کو کمزور کرنے کے لیئے اس کے لیڈروں کو چن چن کر قتل کر رہا ہے۔ حکیم اللہ محسود کے پیشرو اور جانشین دونوں اس کی زد میں آتے رہے اور آتے رہیں گے۔
پہلے مختصر طور پر تحریک طالبان کا پس منظر۔ تحریک طالبان امریکہ اور ہندوستان کا مشترکہ منصوبہ تھا۔ مقصد یہ تھا کہ پہلے "اسلامی امارت وزیرستان" بنائی جائے۔ پھر اسے باقی فاٹا تک پھیلایا جائے۔ اس کے بعد پورے صوبہ کو شامل کرنے کی کوشش کی جائے۔ اس طرح جو ملک وجود میں آئے اس کا نام "پختون خوا" رکھا جائے۔ اسے ہندوستان اور افغانستان فوری طور پر تسلیم کر لیں۔ امریکہ بھی عملی طور پر ساتھ دے۔ اس طرح وہ افغانستان سے نکل کر وہاں مستقل طور پر بیٹھ جائے گا اور پھر امریکہ اور ہندوستان مل کر تمام ہمسایہ ممالک (ایران، وسطی ایشیا، روس، چین اور پاکستان) میں اپنے اپنے مفادات کے لیئے مداخلت کرتے رہیں۔
امریکہ نے افغانستان میں پائوں جماتے ہی عوامی نیشنل پارٹی سے کہا کہ وہ شمال مغربی سرحدی صوبہ کا نام بدل کر "پختون خوا" رکھوائے، جو بعد میں نئے ملک کا نام بن جائے گا۔ (علیحدگی کے لیئے نام پہلا قدم ہوتا ہے۔ عوامی لیگ نے 1956 کے آئین کے مسودہ پر بحث کے دوران "مشرقی پاکستان" کا نام "بنگلہ دیش" رکھنے کے لیئے ترمیم پیش کی تھی۔)
امریکہ تحریک طالبان پاکستان کو پیسہ اور اسلحہ دینے لگا اور ہندوستان دہشت گردی کی تربیت دینے اور منصوبہ بندی کرنے میں لگ گیا۔ جب سوات پر طالبان کا قبضہ ہو گیا تو دونوں ملکوں کو اپنا مقصد پورا ہوتا نظر آیا۔ ان کا اندازہ ٹھا کہ فوج صورت حال سے نبٹ نہیں سکے گی اور نہ ہی سوات کے بے گھر ہونے والے لاکھوں لوگ واپس جا سکیں گے۔ جلد ہی سندھ دریا کے شمال میں سارا علاقہ ان کے کنٹرول میں آ جائے گا۔ صوبہ میں عوامی نیشنل پارٹی نے طالبان کے خلاف کسی بھی قسم کی کاروائی سے گریز کیا۔ (پارٹی کو اسی لیئے حکومت دلائی گئی تھی۔)
امریکہ کا اب کیا منصوبہ ہے؟
امریکہ کی خصوصیت ہے کہ کسی منصوبہ کی ناکامی پر پالیسی بدلنے میں زیادہ دیر نہیں لگاتا۔ جب ہماری فوج نے نہ صرف سوات سے طالبان کو نکال دیا بلکہ لاکھوں افراد کو تھوڑی سی مدت میں ان کے گھروں میں بحال کر دیا تو امریکہ کو یقین ہو گیا کہ فوج کے ہوتے ہوئے "پختون خوا" کا منصوبہ کامیاب نہیں ہو سکے گا۔ دوسری طرف، اسے نظر آیا کہ تحریک طالبان افغان طالبان اور بچی کھچی القاعدہ کی مدد کر رہی ہے تو وہ اس کا دشمن ہو گیا۔ صورت حال یوں بنی کہ امریکہ کھلم کھلا تحریک طالبان کو ختم کرنے کے لیئے کوشش کرنے لگا۔ ڈرون حملوں کا آغاز بھی اسی لیئے ہوا۔
تاہم ہندوستان بدستور جہاں تک ہو سکا اپنے وسائل سے تحریک کی مدد کرتا رہا، کہ نیا ملک نہ سہی لیکن دہشت گردی سے پاکستان کو کمزور تو کیا جا سکتا ہے۔ ساتھ ہی جمیعت علماء اسلام (فضل الرحمان گروپ) اور دوسرے ایجنٹوں کے ذریعہ مذہبی لوگوں کو قائل کرنے لگا کہ تحریک طالبان کامیاب ہو گئی تو پاکستان ان کی خاہش کے مطابق اسلامی ملک بن جائے گا۔ سیکولر حکومتوں سے نالاں بہت سے سادہ لوح افراد پراپیگنڈہ کا شکار ہو گئے۔ مذہبی جماعتوں سے خّوف زدہ حکومتیں تحریک کے خلاف کاروائی سے گریز کرتی رہیں۔ فوج کے مصلحت کوش سربراہ نے بھی عالم بے عمل ہونے کا ثبوت دیتے ہوئے کوئی کاروائی نہ کی، حالانکہ دہشت گردوں نے نہ صرف بہت سے فوجی ٹھاکانوں بلکہ جی۔ ایچ۔ کیو۔ تک پر حملے کیئے۔ سیاسی لوگ کہتے ہیں کہ پرویز مشرف نے فاٹا میں فوج بھیجی اور ڈرون حملوں کی بھی غیررسمی طور پر اجازت دی۔ لیکن یہ سوال نہیں کرتے کہ جنرل کیانی نے چھ سال میں دونوں فیصلے منسوخ کیوں نہ کیئے۔ غلط فیصلہ ہو گیا تو کیا اسے واپس لینا ممکن نہیں تھا؟
تحریک طالبان کیوں ڈرون حملے بند کرانے کے لیئے کوشاں ہے؟
تحریک طالبان کو ہماری فوجی کاروائیوں سے کہیں زیادہ نقصان ڈرون حملوں سے ہو رہا ہے۔ جہاں ہماری فوج نہیں پہنچ سکتی وہاں ڈرون اس کے سرکردہ افراد کو ہلاک کر دیتے ہیں۔ ان کی وجہ سے مختلف گروہوں کے سربراہ ایک دوسرے سے نہ مل سکتے ہیں اور نہ ان کے درمیان رابطہ آسان ہے۔ طالبان اتنے پریشان ہیں کہ مذاکرات کے لیئے ان کی سب سے اہم شرط ہے کہ ڈرون حملے بند کرائے جائیں۔
تحریک طالبان کو نظر آ رہا ہے کہ امریکہ کے چلے جانے کے بعد ہندوستان بھی ہاتھ کھینچ لے گا۔ جب ایک طرف نہ پیسہ ملے گا اور نہ اسلحہ اور دوسری طرف اوپر سے ڈرون اور نیچے سے فوج انھیں نشانہ بنائے گی تو کب تک بچیں گے۔ چنانچہ بیشتر طالبان چاہتے ہیں کہ گھروں کو چلے جائیں۔ البتہ کچھ گروپ اغوا برائے تاوان اور دوسرے جرائم کے سہارے زندہ رہنے کی کوشش کرتے رہیں گے۔ اگر انھیں مقبوضہ کشمیر میں داخل کرا دیا جائے تو وہ وہاں وہی کچھ ہندوستان کے خلاف کریں گے جو ہمارے خلاف کر رہے ہیں۔ ہندوستان کی فلمی زبان مں "پیسہ لے کر سالہ کچھ بھی کرے گا۔"
تحریک طالبان کے ہندوستان کے زیراثر گروہوں کی امن کی خاہش بھی ایک چال ہے۔ ان کی بڑی شرائط دیکھیں: ڈرون حملے بند کیئے جائیں، فوج فاٹا سے نکل جائے اور مذاکرات آئیِن کے تحت نہ ہوں۔ اس کا صاف مطلب یہ ہے کہ انھیں نئے سرے سے جتھہ بندی اور منصوبہ بندی کے لیئے مہلت مل جائے تاکہ وہ الگ ملک کے لیئے کوشش کرتے رہیں۔
امن کے بدلہ ہمیں کیا ملے گا؟
کچھ بھی نہیں! بس کچھ طالبان گھروں کو چل دیں گے، بغیر ہتھیار ڈالے۔ خود کش حملوں کے ختم ہونے کی بھی ضمانت نہ ہوگی کیوں کہ کچھ گروپ ہندوستان کی سرپرستی میں دہشت گردی جاری رکھ سکتے ہیں۔
پھر سیاست کار کیوں امن کے لیئے بے چین ہیں؟ وہ چاہتے ہیں کہ بغیر کچھ کیئے امن ہو جائے۔ انھیں احساس نہیں کہ باغیوں سے کبھی مذاکرات نہیں کیئے جاتے اور نہ ان کی امن کی پیشکش قبول کی جاتی ہے۔ سری لنکا میں 30 سال تک تامل باغیوں کے خلاف کاروائی ہوتی رہی۔ اس وقت ختم ہوئی جب بغاوت کا پوری طرح خاتمہ ہو گیا۔
اگر کبھی کوئی امن معاہدہ ہو بھی گیا، جس میں بیشتر گروپ شامل ہوں، تو زیادہ سے زیادہ یہ ہوگا کہ تحریک طالبان دہشت گردی اور خودکش حملے بند کر دے گی اور دوسری طرف حکومت کسی قسم کی فوجی کاروائی نہیں کرے گی۔
امریکہ کیا چاہے گا؟
یہ "بقاء باہمی" امریکہ کو قبول نہیں ہوگی۔ وہ جاتے ہوئے حکومت طالبان کے حوالہ نہیں کرے گا (گو انھیں حکومت میں شریک بنانے کی کوشش کر سکتا ہے) ممکن ہوا تو اپنی کچھ فوج بھی چھوڑ جائے گا۔ امن کی صورت میں اسے خطرہ رہے گا کہ تحریک طالبان افغان طالبان کو ہر قسم کی مدد دیتی رہے گی، جس سے اس کے لیئے مشکلات پیدا ہوتی رہیں گی۔ چنانچہ امریکہ چاہتا ہے کہ امن مذاکرات نہ ہوں بلکہ ہماری فوج بھرپور کاروائی کرے اور تحریک طالبان کو پوری طرح کچل دے۔ ہماری فوج بھی اس کی ہم خیال لگتی سسہے۔ اس طرح امریکہ کا مقصد پورا ہو جائے گا اور ہمیں دہشت گردی سے نجات مل جائے گی۔ نہ امن معاہدہ ہوگا اور نہ ڈرون حملے بند ہوں گے۔ البتہ سیاست کار شور مچاتے رہیں گے، خاص طور پر فرقہ ورانہ جماعتوں کے۔
الله حافظ!
محمّد عبد الحمید 
مصنف، "غربت  کیسے مٹ سکتی ہے" (کلاسک پبلشر، لاہور)
"دنیا" میں میرے کالموں کے لیئے www.mahameed-dunya.blogspot.com
 

Sunday, November 10, 2013

Can a Terrorist, killer of innocent people be called Shaheed Martyr?



Any leader who die for the power is not Shaheed, Only who is killed for the cause of Allah is Shaheed. The terrorists who kills innocent Muslims violates Quran how can he be Shaheed? Moulana Fazal says even "DOG KILLED BY USA IS SHAHEED" ..... MUAZ ALLAH ... THEY HAVE GONE SO LOW TO EQUATE DOG WITH SHUHADA OF ISLAM ... HAZRAT HAMZA, OMAR, USMAN, ALI. HUSSAIN R.A AND MILLIONS . MUST REPENT .....
They are creation of USA, now they hate them, yet are serving the cause of USA, India, Israel and enemies of Islam, Muslims and Pakistan ......


About Shaheed Allah has mentioned:
Surah No. 2, Al Baqr, Ayat No. 154

وَلاَ تَقُولُواْ لِمَنْ يُقْتَلُ فِي سَبيلِ اللّهِ أَمْوَاتٌ بَلْ أَحْيَاء وَلَكِن لاَّ تَشْعُرُونَ

Translation :
Those who are killed in the cause of Allah: Do not call them dead." In fact ! they are living, though you can not perceive that life.
Surah No. 3, Al Imraan, Ayat No. 169
وَلاَ تَحْسَبَنَّ الَّذِينَ قُتِلُواْ فِي سَبِيلِ اللّهِ أَمْوَاتًا بَلْ أَحْيَاء عِندَ رَبِّهِمْ يُرْزَقُونَ
Translation :
Do not think of those who are killed in Allah's cause as dead. Nay! they are alive, and they are given sustenance from their Sustainer.
NOW WE CAN EASILY DEDUCE AS TO WHO IS KILLING MUSLIMS FOR THE CAUSE OF ALLAH. WHO SAYS:

جس نے کسی انسان کو خون کے بدلے یا زمین میں فساد پھیلانے کے سوا کسی اور وجہ سے قتل کیا اس نے گویا تمام انسانوں کو قتل کر دیا اور جس نے کسی کی جان بچائی اُس نے گویا تمام انسانوں کو زندگی بخش دی"- سورة المائدة، آیت Quran 5:32
if anyone whoever slays a soul, unless it be for manslaughter or for mischief in the land, it is as though he slew all mankind; and whoever keeps it alive, it is as though he kept alive all mankind[Quran 5:32]
SO FOR THOSE WHO CLEARLY VIOLATE COMMANDMENTS OF ALLAH , HOW CAN THEY BE CALLED SHAHEED. THIS REFLECTS OUR IGNORANCE OF COMPLICITY ?

طالبان دہشت گردوں کے ھمدرد ہیں جن کو جاہل قسم کے علماء نے دھوکے میں رکھا ہے ان کا دماغ میں واضح ہو گا کے کون قرآن پر عمل کر رہا ہے ور کون قرآن کو رد کر رہا ہے .

کچھ آیات اور ترجمہ درج زیل ہے :

اسی وجہ سے بنی اسرائیل پر ہم نے یہ فرمان لکھ دیا تھا کہ "جس نے کسی انسان کو خون کے بدلے یا زمین میں فساد پھیلانے کے سوا کسی اور وجہ سے قتل کیا اس نے گویا تمام انسانوں کو قتل کر دیا اور جس نے کسی کی جان بچائی اُس نے گویا تمام انسانوں کو زندگی بخش دی"

مگر اُن کا حال یہ ہے کہ ہمارے رسول پے در پے ان کے پاس کھلی کھلی ہدایات لے کر آئے پھر بھی ان میں بکثرت لوگ زمین میں زیادتیاں کرنے والے ہیں. جو لوگ اللہ اور اس کے رسول سے لڑتے ہیں اور زمین میں اس لیے تگ و دو کرتے پھرتے ہیں کہ فساد برپا کریں اُن کی سزا یہ ہے کہ قتل کیے جائیں، یا سولی پر چڑھائے جائیں، یا اُن کے ہاتھ اور پاؤں مخالف سمتوں سے کاٹ ڈالے جائیں، یا وہ جلا وطن کر دیے جائیں، یہ ذلت و رسوائی تو اُن کے لیے دنیا میں ہے اور آخرت میں اُن کے لیے اس سے بڑی سزا ہے

5: 31-32 سورة المائدة

وَلَا تَقْتُلُوا النَّفْسَ الَّتِي حَرَّمَ اللَّـهُ إِلَّا بِالْحَقِّ

اور کسی جان کو جس کا مارنا اللہ نے حرام کردیا ہے ہرگز ناحق قتل نہ کرنا

(Quran;17:33)

وَمَن يَقْتُلْ مُؤْمِنًا مُّتَعَمِّدًا فَجَزَاؤُهُ جَهَنَّمُ خَالِدًا فِيهَا وَغَضِبَ اللَّـهُ عَلَيْهِ وَلَعَنَهُ وَأَعَدَّ لَهُ عَذَابًا عَظِيمًا

اور جو شخص کسی مسلمان کو قصداً قتل کرے تو اس کی سزا دوزخ ہے کہ مدتوں اس میں رہے گا اور اس پر اللہ غضبناک ہوگا اور اس پر لعنت کرے گا اور اس نے اس کے لئے زبردست عذاب تیار کر رکھا ہے

.(Quran;4:93)

وَالْفِتْنَةُ أَكْبَرُ مِنَ الْقَتْلِ ۗ

فتنہ قتل سے بھی بڑا گناه ہے

[Qur'an;2:217]

أُولَـٰئِكَ الَّذِينَ كَفَرُوا بِآيَاتِ رَبِّهِمْ وَلِقَائِهِ فَحَبِطَتْ أَعْمَالُهُمْ فَلَا نُقِيمُ لَهُمْ يَوْمَ الْقِيَامَةِ وَزْنًا

یہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے اپنے رب کی آیات کو ماننے سے انکار کیا اور اس کے حضور پیشی کا یقین نہ کیا اس لیے اُن کے سارے اعمال ضائع ہو گئے، قیامت کے روز ہم انہیں کوئی وزن نہ دیں گے

(Quran;18:105)

وَإِذَا قِيلَ لَهُمُ اتَّبِعُوا مَا أَنزَلَ اللَّـهُ قَالُوا بَلْ نَتَّبِعُ مَا أَلْفَيْنَا عَلَيْهِ آبَاءَنَا ۗ أَوَلَوْ كَانَ آبَاؤُهُمْ لَا يَعْقِلُونَ شَيْئًا وَلَا يَهْتَدُونَ

اور ان سے جب کبھی کہا جاتا ہے کہ اللہ تعالیٰ کی اتاری ہوئی کتاب کی تابعداری کرو تو جواب دیتے ہیں کہ ہم تو اس طریقے کی پیروی کریں گے جس پر ہم نے اپنے باپ دادوں کو پایا، گو ان کے باپ دادے بےعقل اور گم کرده راه ہوں

(Quran;2:170) Also see Quran;32:21, 43:22,23)

إِنَّمَا جَزَاءُ الَّذِينَ يُحَارِبُونَ اللَّـهَ وَرَسُولَهُ وَيَسْعَوْنَ فِي الْأَرْضِ فَسَادًا أَن يُقَتَّلُوا أَوْ يُصَلَّبُوا أَوْ تُقَطَّعَ أَيْدِيهِمْ وَأَرْجُلُهُم مِّنْ خِلَافٍ أَوْ يُنفَوْا مِنَ الْأَرْضِ ۚ ذَٰلِكَ لَهُمْ خِزْيٌ فِي الدُّنْيَا ۖ وَلَهُمْ فِي الْآخِرَةِ عَذَابٌ عَظِيمٌ

جو اللہ تعالیٰ سے اور اس کے رسول سے لڑیں اور زمین میں فساد کرتے پھریں ان کی سزا یہی ہے کہ وه قتل کر دیئے جائیں یا سولی چڑھا دیئے جائیں یا مخالف جانب سے ان کے ہاتھ پاوں کاٹ دیئے جائیں، یا انہیں جلاوطن کر دیا جائے، یہ تو ہوئی ان کی دنیوی ذلت اور خواری، اور آخرت میں ان کے لئے بڑا بھاری عذاب ہے

“(Quran; 5:33)

وَلَوْلَا دَفْعُ اللَّـهِ النَّاسَ بَعْضَهُم بِبَعْضٍ لَّهُدِّمَتْ صَوَامِعُ وَبِيَعٌ وَصَلَوَاتٌ وَمَسَاجِدُ يُذْكَرُ‌ فِيهَا اسْمُ اللَّـهِ كَثِيرً‌ا ۗ وَلَيَنصُرَ‌نَّ اللَّـهُ مَن يَنصُرُ‌هُ ۗ إِنَّ اللَّـهَ لَقَوِيٌّ عَزِيزٌ

اور اگر خدا لوگوں کو ایک دوسرے سے نہ ہٹاتا رہتا تو (راہبوں کے) صومعے اور (عیسائیوں کے) گرجے اور (یہودیوں کے) عبادت خانے اور (مسلمانوں کی) مسجدیں جن میں خدا کا بہت سا ذکر کیا جاتا ہے ویران ہوچکی ہوتیں۔ اور جو شخص خدا کی مدد کرتا ہے خدا اس کی ضرور مدد کرتا ہے۔ بےشک خدا توانا اور غالب ہے (Quran 22:40)

مَّنِ اهْتَدَىٰ فَإِنَّمَا يَهْتَدِي لِنَفْسِهِ ۖ وَمَن ضَلَّ فَإِنَّمَا يَضِلُّ عَلَيْهَا ۚ وَلَا تَزِرُ وَازِرَةٌ وِزْرَ أُخْرَىٰ

جو کوئی راہ راست اختیار کرے اس کی راست روی اس کے اپنے ہی لیے مفید ہے، اور جو گمراہ ہو اس کی گمراہی کا وبا ل اُسی پر ہے کوئی بوجھ اٹھانے والا دوسرے کا بوجھ نہ اٹھائے گا

(Quran;17:15)

مَّن يَشْفَعْ شَفَاعَةً حَسَنَةً يَكُن لَّهُ نَصِيبٌ مِّنْهَا ۖ وَمَن يَشْفَعْ شَفَاعَةً سَيِّئَةً يَكُن لَّهُ كِفْلٌ مِّنْهَا ۗ وَكَانَ اللَّـهُ عَلَىٰ كُلِّ شَيْءٍ مُّقِيتًا

جو بھلائی کی سفارش کریگا وہ اس میں سے حصہ پائے گا اور جو برائی کی سفارش کرے گا وہ اس میں سے حصہ پائے گا، اور اللہ ہر چیز پر نظر رکھنے والا ہ

.(Quran;4:85)

اگر آپ متفق ہینن تو شئیر کریں

 http://dunya.com.pk/news/authors/detail_image/x4951_12000479.jpg.pagespeed.ic.06dTBfcpfY.jpg
شائد میڈیا چینلز اور حکومت تک بات پہنچ جائے . بحر حال آپ نے اپنا فرض ادا کر دیا .
From FACEBOOK



http://takfiritaliban.blogspot.com

Saturday, November 9, 2013

Pakistani Taliban and Mullah Fazal Ullah Mullah Radio

Updates on TTP: >>>>>

Target: Pakistan: New TTP chief

WITH a single appointment, the TTP has sent across a host of unwelcome messages. First, it has signalled that its... >>>>>>>
"Jihad ? " by Taliban against Muslims and Islam 
A damaged mosque is seen at the site of a bomb attack in the Spin Tal region of Hangu district, bordering North Waziristan in October 3, 2013. (Reuters )

The divides over drones

WHAT the drone strike last week has achieved is that it has removed the recent confusion in the opposing camps in... >>>>>>>

Reality and self-delusion

HERE’S some folk wisdom from Kentucky that is good advice for sensible people: there’s no education to be had... >>>>>>

To what end?: Talks with the Taliban

THE government wanted it and the opposition has granted it, but no one has quite been able to explain any of it:... >>>>>
http://dunya.com.pk/news/authors/detail_image/x4952_23718742.jpg.pagespeed.ic.XRYcEmikDY.jpg
http://dunya.com.pk/news/authors/detail_image/x4955_17306692.jpg.pagespeed.ic.axExwU3-Zr.jpg
http://dunya.com.pk/news/authors/detail_image/x4951_12000479.jpg.pagespeed.ic.06dTBfcpfY.jpg

Wednesday, November 6, 2013